علامہ اقبال نے قرآن کا پیغام اپنی شاعری میں دنیا تک پہنچایا

جگنو انٹر نیشنل کی چھٹی سالگرہ
November 4, 2020
زیب النساءزیبی
November 7, 2020

علامہ اقبال نے قرآن کا پیغام اپنی شاعری میں دنیا تک پہنچایا

قائداعظم لائبریری باغ جناح لاہور میں شاعر مشرق علامہ محمد اقبال رحمتہ اللہ علیہ کے یوم پیدائش کے سلسلے میں اقبالیا ت کے موضوع پر ایک تقریب کا اہتمام ڈائریکٹریٹ آف پبلک لائبریریز پنجاب،گورنمنٹ پنجاب پبلک لائبریری لاہور،گورنمنٹ ماڈل ٹاون لائبریری لاہوراور قائداعظم لائبریری کے باہمی اشتراک سے کیا گیا۔تقریب کا باقائدہ آغاز تلاوت قرآن پاک سے کیا گیا اور کلام اقبال سے حاضرینِ محفل کو مستفید کیا گیا۔سیکریڑی سٹیج کے فرائض مس اقراءطارق نے ادا کیے.اس تقریب میں طلباٰءو طالبات اور سول سوسائیٹی اور مختلف مکتبہ فکر کے لوگوں نے شرکت کی۔ڈاکٹر محمود علی انجم،صدر بزمِ فکرِ اقبال (پی۔ایچ۔ڈی اقبالیات / اردو) نے شاعر مشرق علامہ محمد اقبال رحمتہ اللہ علیہ کی زندگی کے مختلف پہلووں پر روشنی ڈالتے ہوئے سیر حاصل خطاب کیا۔انہوں نے کہا کہ علامہ اقبال کو شاعر مشرق کہا جاتا ہے کیونکہ اُن کا تعلق مشرق سے تھا لیکن اصل میں وہ آفاقی شاعر تھے۔ کیوںکہ انہوں نے قرآن مجید کا پیغام اپنی شاعری کے ذریعے سے پوری دُنیا تک پہنچایااور شاعری کے ذریعے اُمتِ مسلمہ کے مسائل کا جائزہ لیتے ہوئے شاعری کے انداز نہ صرف اپنے ادوارکی ضرورت کے مطابق رہنمائی نہیں فرمائی بلکہ آنے والی نسلوں کے لیے بھی اُن کی تعلیمات مشعلِ راہ ہیں۔ڈاکٹر عائشہ سعید ڈائریکٹر جنرل پبلک لایبریریز پنجاب نے شُرکاٰءسے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ علامہ محمد اقبال رحمتة اللہ علیہ نے 1930ءمیں آلہ آباد کے آل انڈیا مسلم لیگ کے سالانہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے دو قومی نظریہ پیش کیا کہ برصغیر پاک وہند میں دو قومیں آباد ہیں ایک ہندو اور دوسری مسلمان۔لہذا مسلمان ہندوستان میں اقلیت نہیں ہیں بلکہ ایک قوم ہیں۔اس لیے مسلم اکثریت علاقوں کے ملا کر ایک الگ ریاست کا قیام نا گزیر ہے۔ انہوں نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ علامہ اقبال رحمتہ اللہ علیہ اپنے زندگی میں اس خواب کو شرمندہ تعبیر ہوتا نہ دے سکے کیونکہ 1938ءمیں آپ کی وفات ہو گئی تھی لیکن چودہ اگست 1947ءکو قائداعظم محمد علی جناح کی دن رات کی محنت سے یہ خواب شرمندہِ تعبیر ہوا اور مملکتِ خدادادِ پاکستان وجود میں آیا۔ ڈاکٹر عائشہ سعید ڈائریکٹر جنرل پبلک لائبری پنجاب نے تقریب میں حصہ لینے والے مقررین اور شُرکاءکا شکریہ ادا کیا۔اس تقریب کے مہمانِ خصوصی طاہر یوسف سیکرٹری ارکائیوز اینڈ لائبریریز گورنمنٹ آف پنجاب نے یوم اقبال کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا علامہ اقبال ایک سچے عاشق رسول تھے۔اس امر کی اشد ضرورت ہے کہ اُن کی شاعری میں جو عشقِ رسول کا درس ملتا ہے اسے عملی طور پر اپنے اور معاشرہ کے افراد پر اجتماعی طور پر نافذ کرنے کی ضرورت ہے۔اُنہوں نے اپنی شاعری کے ذریعے خودی کے تصور کو بالکل الگ طریقے سے پیش کیا۔انہوں نے کہا کہ انسان اللہ کے رسولﷺ کے اسوہ حسنہ کو سمجھے اس کے بعد اللہ تعالیٰ انسان کو ہدایت دیتا ہے۔آخر میں مہمانِ خصوصی طاہر یوسف سیکرٹری ارکائیوز اینڈ لائبریریز پنجاب نے مقررین اور تقریب کے منتظمین میں یادگاری شیلڈ تقسم کیں۔پروگرام کی ارگنائزنگ کمیٹی کے فرائض ڈائریکٹر حافظ محمد توفیق،عبدالغفور چیف لائبریرین قائداعظم لائبریری لاہور،مظہر اقبال ایڈمن آفیسر، شاہد پرویز کمپوٹر پروگرامر، شیخ عبدالرحیم،ملک عید محمد چیف لائبریرین ماڈل ٹاون لائبریری لاہور،مس اقراءطارق،مس فروا تقی،عبدالرسول کیئرٹیکر، اور شیرافضل ملک میڈیا منیجر ڈائریکٹریٹ آف پبلک لائبریریز پنجاب/قائداعظم لائبریری لاہور نے الیکڑانک اور پرنٹ میڈیا کو سہولیات مہیا کیں۔