امی کا دوپٹہ

حال میں ماضی
April 19, 2021
مدد کرنے کے لئے رقم کا زیادہ ہونا ضروری نہیں،بلکہ جذبہ اور نیت ہونا ضروری ہے
April 19, 2021

امی کا دوپٹہ

کوئی بات نہیں،تم یہ دوپٹہ لے لینا جو میں نے اوڑھا ہوا ہے،یہ اچھا میچ ہو جائے گا
مریم شہزاد
میں آج بہت خوش تھی،کل میرے اسکول میں فنکشن ہے جس میں مجھے امی کا کردار ادا کرنا ہے،اسکول میں فائنل تیاری کے بعد بھی آج مجھے گھر میں اچھی طرح سے تیاری کرنی تھی،کیونکہ ٹیچر نے کہا تھا کہ اپنی امی کو اچھی طرح سے دیکھنا کیسے ا±ٹھتی بیٹھتی ہیں،کام کرتے وقت دوپٹہ کیسے لیتی ہیں وغیرہ وغیرہ۔

آج چھٹی تھی،مگر اس کے باوجود میں صبح صبح ہی جاگ ا±ٹھی۔سارا دن میں امی کو دیکھتی رہی کہ کیا کیا کام کس طرح کیا۔رات کو اچانک یاد آیا کہ مجھے جو کپڑے کل پہننے ہیں اس کا تو دوپٹہ ہی نہیں تھا۔میں نے پریشان ہو کر امی سے کہا تو انھوں نے تسلی دی:”کوئی بات نہیں،تم یہ دوپٹہ لے لینا جو میں نے اوڑھا ہوا ہے،یہ اچھا میچ ہو جائے گا۔

”یہ دوپٹہ!????“میں ایک دم پریشان ہو گئی۔

”کیوں،کیا ہوا؟“امی نے پوچھا تو میں نے کہا:”نہیں کچھ نہیں،بس میں سونے جا رہی ہوں۔“
میں بستر پر آکر لیٹ گئی،مگر نیند میری آنکھوں سے کوسوں دور تھی۔

میری آنکھوں میں صبح سے اب تک کی امی کی مصروفیات چل رہی تھیں۔صبح صبح امی نے دھلا ہوا دوپٹہ لیا اور کچن میں آگئیں۔ناشتہ بناتے بناتے امی نے جتنی بار ہاتھ دھوئے اسی دوپٹے سے خشک کیے،پھر برتن دھونے کے بعد بھی دوپٹے سے ہی ہاتھ پونچھے۔

کھانا پکاتے اور روٹی بنانے میں گرمی کی وجہ سے چہرے پر آیا ہوا پسینا صاف کرنے میں بھی دوپٹہ ہی کام آیا۔چھوٹا بھائی مٹی میں کھیل کر باہر سے آیا تب اس کے ہاتھوں کی مٹی بھی اسی دوپٹے سے صاف کر دی۔گرم پتیلی چولہے سے اتار کر ایک طرف رکھی تو وہ بھی دوپٹے سے ہی پکڑ کر،اور تو اور منی کی بہتی ہوئی ناک بھی کتنی ہی مرتبہ دوپٹے کے کونے سے صاف کر دی۔

”ا±ف!میں یہ دوپٹہ کیسے لوں گی۔“میں یہ سوچتے سوچتے سو گئی۔
صبح جب میں ا±ٹھی اور اسکول کے لئے تیار ہو کر باہر آگئی تو سامنے ہی امی کا دوپٹہ دھلا اور استری کیا ہوا رکھا تھا۔پتا نہیں امی نے یہ کب دھویا اور استری کیا۔میں نے سوچا اور خوشی خوشی دوپٹہ لے کر اسکول چلی گئی۔